سال 2022؁ء کے 186ویں یوم منگل کے افسانچے

محمدیوسف رحیم بیدری، بیدر۔ کرناٹک۔ موبائل:9141815923

0
Post Ad

۱۔ نیک گروہ
تالاب میں مچھلیوں کی افزائش ہونے لگی ہے۔ شکاریوں کو جال ہاتھوں میں لئے تالاب کارخ کرنا چاہیے۔ ورنہ دوسرے افراد مچھلیوں کاشکار کرلیں گے۔ تمہارے بابا عیسیٰ نے مچھواروں کو انسانوں کاشکار کرنا سکھایاتھا۔ سکھایاتھا نا؟ اسلئے اٹھو اور الیکشن میں حصہ لو۔ خود تو جیتو گے ہی۔ اگر ایسانہیں ہوسکاتودشمن کو ہراتوسکتے ہو۔
وقت نے بتایاکہ وہ گروہ آج بادشاہ گر ہے اور نیک نام بھی ہے۔

۲۔جانے والا
وہ مثبت سوچ رکھتاتھا۔ ہرحال میں اچھی اور مثبت سوچ، یہی اس کا اصول تھا۔ جس وقت وہ زندگی سے ہارا تب بھی سوچ رہاتھا کہ بلاوا آچکاہے۔وہاں کامہمان دنیا میں چندلمحوں کا مہمان ہے۔
اس کے بیوی بچوں کاروروکر بر احال تھا۔ لیکن اس کے چہرے پر مسکراہٹ تھی۔

۳۔ فیک کامیابی
اس کا پھرفون آئے گا۔ وہ کہے گا ”انھوں نے میری بات نہیں سنی“
میں کہوں گا”ٹھیک ہے جو عہدہ مل رہاہے وہی لے لو“ میری بات سن کر وہ خوش ہوجائے گا۔
اس کو خوشی اس بات کی رہے گی کہ اس نے مجھے الو بنانے میں کامیابی حاصل کرلی ہے۔

۴۔ غیرت
وہ جب حیدرآباد سے واپس آیاتو اس نے تینوں بیٹیوں کیلئے فی بیٹی 3کے حساب سے جملہ 9اوڑھنیاں خرید لایا۔ بیوی نے جب اوڑھنیوں کودیکھاتو احتجاج کرتے ہوئے کہا”اوڑھنیاں تو ہم یہاں بھی خرید سکتے تھے اور پھر ایک ایک کو تین تین لانے کی کیاضرورت تھی؟“
شوہر نے بیوی کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر کہا”بیٹیاں جب بڑی ہونے لگیں تو ان کے دوپٹہ(اوڑھنیاں) بھی ان ہی کی طرح بڑے بڑے خریدے جانے چاہیے۔ چھوٹے نہیں“ پھر اس نے دوپٹوں پر محبت سے ہاتھ پھیرتے ہوئے کہا”یہ دوپٹے کافی لمبے اور پھیلے ہوئے ہیں، مہنگے ہیں تو کیاہوا“
بیٹیوں سے شوہر کی محبت کوبیوی سمجھنے کی کوشش کررہی تھی۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.

error: Content is protected !!